عدالت میں جج کے سامنے بیوی کا شوہر سے انوکھا مطالبہ

بیوی کا شوہر سے انوکھا مطالبہ

ازدواجی رشتے میں جتنی محبت اور باہمی احترام ہوتا ہے، رشتہ اتنا ہی مضبوط ہوتا ہے، لیکن آپ کو یہ جان کر حیرت ہوگی کہ صرف اختلاف ہی نہیں بلکہ کامل محبت بھی طلاق پر مجبور ہو سکتی ہے۔

ایسا ہی ایک کیس متحدہ عرب امارات کے شہر شارجہ میں پیش آیا جہاں ایک خاتون نے اپنے شوہر سے طلاق کے لیے عدالت میں درخواست دے دی۔

عدالت میں اپنی طلاق کی درخواست میں خاتون نے موقف اختیار کیا کہ میرے شوہر نے آج تک کبھی میرے خلاف تنقید نہیں کی۔ وہ مجھ سے اتنا پیار کرتا ہے کہ اکثر اپنا کھانا پکاتا اور گھر کی صفائی کرتا۔

خاتون نے درخواست میں مزید کہا کہ اس کا شوہر مجھے کسی چیز سے ٹالتا نہیں لیکن میں اس کی بے پناہ محبت سے تنگ آچکی ہوں۔ مجھے امید ہے کہ میرے شوہر ایک دن مجھ سے بحث کریں گے۔ لیکن جب میں اپنی ناراضگی کااظہار کرتی ہوں تو وہ میرے لیے تحفے لاتا ہے۔

خاتون کے مطابق میں تھک چکی ہوں اور ایسی زندگی نہیں چاہتی اس لیے طلاق مانگ رہی ہوں۔

دریں اثناء مشتعل شوہر کا کہنا تھا کہ مجھے ایک بار بیگم نے زیادہ وزن کا طعنہ دیا تووزن کم کرنے کےلیے سخت ورزشیں کرنا شروع کردیں جس کی وجہ سےمیں زخمی بھی ہوا۔ میں ہمیشہ اپنے آپ کو ایک اچھے شوہر کے طور پر دیکھنا چاہتا تھا۔

دریں اثناء مشتعل شوہر نے بتایا کہ بیگم کی طرف سے وزن زیادہ ہونے کا کی وجہ سے مجھے مارنے کے بعد میں نے سخت ورزشیں کرنا شروع کر دیں۔ میں ہمیشہ اپنے آپ کو ایک اچھے شوہر کے طور پر دیکھنا چاہتی تھی۔

کیونکہ وہ اپنی بیوی سے بہت پیار کرتا تھا، اس لیے اس نے عدالت سے اسے واپس لینے کی درخواست کی۔

عدالتی ذرائع کے مطابق عدالت نے سماعت ملتوی کرتے ہوئے میاں بیوی میں صلح کرانے کی کوشش کی۔